لطائف

استاد صاحب کمرہ  جماعت میں داخل ہوئے اور بولے، کلاس میں جو سب سے سست لڑکا ہے وہ کھڑا ہو جائے میں اسے سو روپے انعام دوں گا۔

کمرہ  جماعت کے تمام طلباء فوراً کھڑے ہو گئے لیکن شہزاد بیٹھا رہا ۔ استاد صاحب نے شہزاد کو سو روپے دیتے ہوئے کہا، تم سب سے سست لڑکے ہو یہ لو تمہارا انعام۔

شہزاد نے کہا: جناب! مہربانی فرما  کر میرا انعام میری جیب میں ڈال دیں۔

عفاف طارق، جماعت ششم، گورنمنٹ ایم سی بوائزہائی سکول چاہ فتح خان، بہاول پور

نانی : رخسانہ بتاؤ 100 میں سے 11 تفریق کر دیں تو کیا بچے گا ؟

رخسانہ:  نانی “میں” بچوں گی ۔

نانی :  وہ کیسے؟

رخسانہ : میں آپ کی “نواسی” ہوں نا۔

حنیف ریاض، جماعت ہفتم، گورنمنٹ ایم سی بوائز ہائی سکول چاہ فتح خان، بہاول پور

بزرگ:  ذہین بیٹے یہ بتاؤ تم بڑے ہو کر اپنی امی پر جاؤ گے یا ابو پر؟

ذہین:  اوں ہوں بڑا ہو کر میں نہ امی پر جاؤں گا نہ ابو پر بلکہ کار پر جاؤں گا۔

کیف ریاض، جماعت ہشتم، گورنمنٹ ایم سی بوائز ہائی سکول چاہ فتح خان، بہاول پور

ایک خاتون نے دوسری خاتون سے پوچھا ، جنت میں مردوں کو تو حوریں ملیں گی مگر عورتوں کو کیا ملےگا؟

یہی اپنے اپنے خاوند، دوسری عورت نے جواب میں بتایا۔

پہلی عورت نے یہ سنا تو تلخی سے بولی۔ دفع کرو پھر مرنے کا کیا فائدہ۔

٭٭٭

ایک شخص اپنا رنگین ٹی وی اور وی سی آر اٹھائے سمندر کی طرف بھاگے جا رہا تھا۔ 

راستے میں اس کا دوست ملا اور اس نے حیرانی سے پوچھا۔

 یہ کیا ماجرا ہے، کہاں جا  رہے  ہو؟

وہ بولا، خودکشی کرنے جا رہا ہوں اور ٹی وی، وی سی آر ساتھ لے کر ڈوبوں گا، میری بیوی مجھ پر نہ سہی ان چیزوں کی محرومی کا تو ماتم کرے گی۔

٭٭٭

ایک آدمی نے ریسکیو 1122 کے دفتر میں فون کرتے ہوئے کہا: “دیکھئے میں نے حال ہی میں اپنا باغ سنوارا ہے میں نے اس میں بیش قیمتی پودے لگائے ہیں۔

کیا اس میں آگ لگ گئی ہے؟ دوسری طرف سے پو چھا گیا۔ 

کچھ پودے تو بالکل ہی نایاب ہیں۔ میں نے انہیں بڑی مشکل سے حاصل کیا ہے 

“دوسری طرف سے غصے بھری آواز آئی۔  “دیکھئے جناب! یہ ریسکیو 1122 کا دفتر ہے، کوئی نرسری یا گل فروشی کی دکان نہیں۔ 

معلوم ہے مجھے! ذرا غور سے میری بات سنئیے، میرے پڑوس میں آگ لگ گئی ہے اور میں نہیں چاہتاکہ جب آپ لوگ آگ بجھانے آئیں تو میرے باغ اور پودوں کو نقصان پہنچائیں۔

٭٭٭

ایک ملازم کو تنخواہ ملی تو اس نے سوچا بیوی کے حوالے کرنے سے پہلے کم ازکم رقم تو گن لے۔

 جب ا س نے رقم گنی تو اس میں سو روپے زیادہ تھے۔ 

وہ فوراً کیشئر کے پاس پہنچا اور بولا آپ نے غلطی سے سو روپے زیادہ دے دئیے ہیں۔

 کیشئر نے رقم گنی اور کہا رقم تو بالکل ٹھیک ہے۔

 بات دراصل یہ ہے کہ آپ کی تنخواہ میں گزشتہ تین مہینوں سے سو روپے کا اضافہ ہو چکا ہے۔

 وہ شخص حیرانی سے بولا: کمال ہے یار! میری بیوی نے تو مجھے بالکل بتایا ہی نہیں۔

محمد اعجاز، جماعت ششم،گورنمنٹ ایلیمنڑی سکول تلہار، ضلع بہاول پور

ایک شخص (دوسرے شخص سے) یہ بچہ تمہارا کیا لگتا ہے؟

دوسرا شخص :  یہ میرا دور کا سگا بھائی ہے۔

پہلا شخص :  وہ کیسے؟

دوسرا شخص:  کیونکہ اس میں اور مجھ میں آٹھ بہن بھائیوں کا فاصلہ ہے۔

٭٭٭

استا د (بچوں سے) یہ بتاؤ تارے دن میں کیوں نہیں نظر آتے؟

ایک بچہ جلدی سے کھڑا ہوکر بولا: سر! وہ سورج کے راستے میں ٹانگ نہیں اڑانا چاہتے۔

٭٭٭

ڈاکٹر (ایک باپ سے) جناب مبارک ہو، آپ کی بیوی کو اللہ تعالیٰ نے بیٹے سے نوازا ہے۔

باپ : چھوڑیے ڈاکٹر صاحب یہ بڑا ہو کر فیس بک پر لڑکی بنے گا۔

علی حسن، جماعت ہشتم، گورنمنٹ ایم سی بوائز ہائی سکول چاہ فتح خان، بہاول پور

باپ: (بیٹوں  سے مخاطب ہو کر) یہ ذرا میرے لئے ایک گلاس پانی لانا

ایک بیٹا: سوری ابو! میں گیم کھیل رہا ہوں، میں نہیں لاسکتا

دوسرا بیٹا: ابو یہ تو ہے ہی بدتمیز  جائیں آپ خود جا کرپی لیں۔

٭٭٭

پولیس والا (اپنے  بیٹے سے)  بیٹا! تمہارا رزلٹ بہت برا آیا ہے۔ آج سے تمہارا کھیلنا اور ٹی وی دیکھنا بند۔

بیٹا: ابا جان! یہ 50 روپےپکڑیں اور اس بات کویہیں ختم کردیجئے۔

٭٭٭

ویٹر: سردار جی کیا کھائیں گے۔

سردار: چکن لےآؤ

ویٹر:  سر!کون سا چکن پسند کریں گے؟ اٹالین، فرنچ، سوئیڈش یا چائینیز

سردار:  جو مرضی آئےلےآؤ، میں نے کون سا ان سے باتیں کرنی ہیں۔

٭٭٭

استاد (شاگرد سے) غسل کےکتنےفرائض ہوتے  ہیں؟

شیدا: استاد  جی! فرائض کیا ہوتےہیں؟

استاد:  جن کے بغیرغسل نہیں ہوتا۔

شیدا:     4

استاد:  کون کون سے؟

شیدا:  بالٹی، مگا، صابن اور تولیہ

٭٭٭

استاد (شاگرد سے)  پانی کا کیمیکل فارمولا بتاؤ۔

H2O (H to O) H, I, J, K, L, M, N, O  شاگرد

زینب یونس، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول،سرکی ضلع مظفر گڑھ

استاد (شاگرد  سے)  تم نے سبق کیوں یاد نہیں کیا؟   

شاگرد:  جناب! بجلی چلی گئی تھی۔   

استاد:  جب بجلی آئی تھی تو اس وقت  یاد کر لیتے۔ 

شاگرد: جناب! میں نے اس ڈر سے سبق یاد نہیں کیا کہ کہیں بجلی دوبارہ نہ چلی جائے۔  

یمینہ فاطمہ، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول، چک نمبر 148 تحصیل حاصل پور

بچہ پہلے دن اسکول سے واپس آیا۔ ماں نے پوچھا

بیٹے آج تم نے کیا سیکھا؟

کچھ نہیں ماں، کل پھر جانا  پڑے گا۔ بچے نے سادگی سے جواب دیا۔

عائشہ کلثوم، جماعت پنجم، گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول بدھو والی، تحصیل احمد پور شرقیہ
شیئر کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •