میرا استاد اس دنیا کا سب سے بہترین شخص ہے۔ وہ ہر لحاظ سے میری تربیت کرتا ہے۔
میری ذہنی نشوونما میں اس کا ایک خاص کردار ہے وہ مجھے معاشرے میں جینے کہ آداب سکھاتا ہے۔ جب میں غلطی کرتا ہوں تو وہ مجھے میرے والد کی طرح ڈانٹتا ہے ۔ جب مجھے کوئی تکلیف ہوتی ہے تو مجھے ماں کی طرح پیار کرتا ہے ۔ جب وہ ہمارے ساتھ کھیلتے ہیں تو مجھے وہ میرے بڑے بھائی لگتے ہیں ۔ ایک دفعہ ہم میچ کھیل رہے تھے دوڑتے ہوئے میں گر گیا انھوں نے مجھے آ کر اٹھایا۔ میرے پاوں میں چوٹ آئی تھی اور خون بہہ رہا تھا ۔ انھوں نے مجھے اٹھایا اور مرہم پٹی کی پھر مجھے قریبی ڈاکٹر کے پاس لے گئے، دوائی دلوائی۔
اور مجھے گھر چھوڑ کر آئے جب انھوں نے مجھے میر ے والد کے حوالے کیا تو میری آنکھوں میں آنسو آگئے ۔ میں نے ان سے کہا سر آپ بہت اچھے ہیں ۔ اللہ پاک ایسے اساتذہ ہرکسی کو دے

آمین

شیئر کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •