ایسی جان ہے، جانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

برسا یوں بارانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

مسلم، کافر، انساں، حیواں، سب ہی بہرہ مند ہوئے

ہر جانب فیضانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

دنیا، عقبیٰ، برزخ، محشر، ہر عالم میں اس کا ظہور

ختم نہ ہو احسانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

ساری امت، ساری عمر بھی گرچہ درودِ پاک پڑھے

ہم کیا لکھیں شانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

حسان و رومی و جامی، سب ہی جہاں شرمندہ ہوں

کل عالم قربانِ محمد صلی اللہ علیہ و سلم

(شاہین اقبال اثر)

شیئر کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
258
2