اقوال زریں

سنہری باتیں

٭اند ھیرے کو روشنی میں بد لنےکے لئے روشنی کی ایک ننھی سی کرن ہی کا فی ہوتی ہےاور ہو سکتا ہےوہ کرن آپ ہوں۔

٭زندگی میں اتنی محنت کیجیے کہ آپ کی تقدیر بھی آپ کی سوچ کی پیروی کرے۔

٭دشمن کے دل کو مہربانی سے جیتیں اور دوست کا دل نیک سلوک سے۔

 ٭سب سے بڑی دولت عقل ہے اور سب سے بڑی مفلسی بے وقوفی ہے۔

٭غصہ آپ کو کمزور بنا دیتا ہے  اور آپ کی کمزوری دوسروں کو طاقت ور بنا  دیتی ہے۔

٭آدمی پہاڑ سے گر کر اٹھ جاتا ہے مگر نظر سے گر کر نہیں۔

٭آپ لوگوں کے لئے اتنے نرم نہ بنیں کہ لوگ آپ کو نچوڑ دیں اور اتنے سخت بھی نہ بنیں کہ وہ آپ کو توڑ دیں۔

٭بہترین انسان وہ ہے جو دوسروں کے دل میں اتر کر اس کے دکھ کا اندازہ کر سکے۔

سونیا رحیم، گورنمنٹ گرلز ترکش ماڈل ولیج سکول رکھ عظمت والا، ضلع راجن پور

باتوں سے خوشبو  آئے

٭اگر آپ زندگی میں اچھا انسان بننا چاہتے ہیں تو اپنے دل میں انسانیت کے لیے محبت پیدا کیجیے۔

٭جیسا سوچیں گے ویسا بنیں گے ، آپ کے خیالات ہی آپ کی تقدیر ہیں۔

٭مایوسی ایک دھوپ ہے جو سخت سے سخت وجود کوبھی جلاکر رکھ دیتی ہے۔

ثانیہ ظہور، جماعت نہم، گورنمنٹ گرلز ماڈل ہائی سکول نمبر1، راجن پور

حکایاتِ سعدی

٭وہ دُشمن جو بظاہر دوست ہو اُس کے دانتوں کا زخم زیادہ گہرا ہوتا ہے۔

٭اگرچہ معاف کردینا ایک اچھا فعل  ہے لیکن لوگوں کو ستانے والے کے زخم پرمرہم نہ رکھیں۔

رابعہ بی بی، جماعت چہارم، گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول سرکی، ضلع مظفر گڑھ

سنہرے  قول

٭جس کا دل خوف سے خالی ہو اس کا گھر رحمتوں سے نہیں بھر سکتا ۔

٭اپنا غم سوچ سمجھ کر با نٹنا چاہیے ،دنیا میں ہمدرد کم اور سر درد زیادہ ملتے ہیں۔

٭کڑوی زبان والے کا شہد بھی نہیں بکتا ، میٹھی زبان والے کا زہر  بھی بک جاتا ہے۔

٭سب سے زیادہ جاہل وہ  ہے جو گناہ سے باخبر ہوتے ہوئے بھی گناہ کر جا ئے ۔

مصطفٰی کمال پاشا، جماعت اول، الخیر ہائیر سکینڈری سکول اوچ شریف، ضلع بہاول پور

مہکتے لفظ

٭اللہ کے نز دیک سب سے عظیم وہی ہیں جودوسروں کی خدمت کرتے ہیں۔

٭اچھے لوگوں کی صحبت اختیار کرو اس سے تمہارے سب کام اچھے ہو جائیں گے۔

٭خوبصورتی حسن میں نہیں بلکہ اچھے اخلاق میں ہوتی ہے۔

٭دشمن ایک بھی بہت اور دوست زیادہ بھی کم ہیں۔

حفصہ ندیم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ولایت آباد، ملتان

لفظ لفظ خوشبو

زندگی میں ہر موڑ پر آپ کا سامنا راستے پر پڑے پتھروں سے ہوگا ، اب  یہ آپ پر منحصر ہے کہ آپ اس سے کیا بناتے ہیں۔ مشکلوں کی دیوار یا کامیابی کا پل۔

اقصیٰ سرور، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول چک نمبر 168/ 10 آر، ضلع خانیوال

واہ کیا بات ہے

٭ایک ہی شخص آپ کی زندگی بدل سکتا ہےاور وہ صرف اور صرف آپ خود ہی ہیں۔

٭ہم ہر دن کو یاد نہیں رکھ سکتے لیکن ہمیں اپنے اچھے اور برے دن ہمیشہ یاد رہتے ہیں۔

عبداللہ شاہ طارق ، جماعت سوئم، گورنمنٹ پائلٹ سکنڈری سکول رحیم یار خان

سنہری باتیں

٭ جس کا کوئی خواب نہیں اس کا کوئی مستقبل نہیں۔

٭  جس شخص کے اچھے دوست ہوتے ہیں وہ کبھی بھی غریب نہیں ہوتا۔

٭ مومن کا اتنا علم کافی ہے کہ وہ اللہ سے ڈرتا رہے۔

٭  علم اگر عمل میں بدل جائے تو شخصیت چمک اٹھتی ہے۔

٭  تعلق بھی رزق کی طرح ہوتا ہے بدنیتی آجائے تو برکت ختم ہوجاتی ہے۔

ربیعہ ریاض، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 293 ٹی ڈی اے، ضلع لیہ

حرف حرف خوشبو

٭اچھی کتابیں بہترین دوست ہیں۔

٭ والدین کی طرف محبت کی نگاہ سے دیکھنا عبادت ہے۔

٭ عقل مند وہ ہے جو اپنی عمر کو غیر ضروری کاموں میں صرف نہ کرے ۔

 ٭ خود غرضی نہ کرو جلد بد نام ہو جا ؤ گے ۔

٭کھانے پینے کی اشیا میں ملاوٹ کرنے والا ظالم ہے ۔

 ٭دنیا داروں کی دوستی معمولی بات سے ختم ہو جاتی ہے ۔

 ٭ بہترین دوست وہ ہے جو عیب کی اصلاح کر دے ۔

نغمہ ظفر ،جماعت نہم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول میر والہ جتوئی،مظفرگڑھ

اقوال زریں

٭ لوگ کامیابی کو پسند کرتے ہیں، مگر کامیاب لوگوں سے نفرت کرتے ہیں۔ (کیرٹ ٹاپ)

٭ علم کی جستجو جس رنگ میں بھی کی جائے، عبادت کی ایک شکل ہے۔ (علامہ محمد اقبال)

٭ سب کا دوست کسی کا دوست نہیں ہوتا۔ (ارسطو)

فرح ممتاز، جماعت نہم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول گوگڑاں ضلع لودھراں

سنہری باتیں

٭ اپنے کل کو  بہتر بنانے کے لیے اپنا آج سنوارو۔

٭ محنت اتنی خاموشی سے کرو کہ تمھاری کامیابی شور مچا دے۔

٭ بہترین انسان عمل سے پہچانا جاتا ہے،ورنہ اچھی باتیں تو دیواروں پر بھی لکھی جاتی ہیں۔

اریج فاطمہ، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول ٹھٹھی کہاوڑاں، ضلع ملتان

باتوں سے خوشبو آئے

٭ بلندی عجز و انکساری میں ہے، لیکن لوگ تکبر میں تلاش کرتے ہیں۔
٭ عزت تواضح اور خاکساری میں ہے، لیکن لوگ حسد اور بغض میں تلاش کرتے ہیں۔
٭ انسانیت اگرچہ اخلاق میں ہے، لیکن لوگ بداخلاقی میں تلاش کرتے ہیں۔
٭ دوستی محبت اور خلوص میں ہے، لیکن لوگ خود غرضی میں تلاش کرتے ہیں۔
٭ دعا کی قبولیت لقمہ حلال میں ہے، لیکن لوگ لقمہ حرام میں تلاش کرتے ہیں۔

لائبہ بی بی، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول سمرا نشیب شمالی، لیہ

بڑے لوگوں کی  بڑی باتیں

٭ افضل ترین نیکی خلقِ خدا کو  آرام پہچانا ہے۔(حضور اکرمﷺ)

٭ استاد کی مار ، باپ کے پیار سے بہتر ہے۔(شیخ سعدیؒ)

٭ کامیابی کے  لیے ایک حصہ ذہانت اور  نو حصے محنت کی ضرورت ہوتی ہے۔(شہید حکیم  محمد سعید)

 ٭ اگر محنت بے دلی سے کی جائے تو اچھے نتیجے  کا انتظار  فضول ہے۔ (واصف علی واصف)

٭ انسان آنسوؤں اور مسکراہٹوں میں لٹکا ہوا پنڈولم ہے۔ (با ئرن)

٭ حالات سے ڈرنا ، زندگی میں  زہر گھولتا ہے۔(ڈاکٹر جارڈن)

آمنہ نور ، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول مینگو ریسرچ ملتان

لفظ لفظ معتبر

٭ زمین کے اوپر عاجزی سے رہنے والے زمین کے نیچے سکون سے رہتے ہیں۔

٭وقت اچھا ہو یا برابدلتا ضرور ہے ، اس لیے اچھے وقت میں کچھ ایسا برا مت کریں  کہ برے وقت میں اچھے لوگ ساتھ چھوڑ جائیں۔

٭ عزت ، احساس ، شفقت اور پیار ایسے ادھار ہیں جو آپ کو واپس ضرورملیں گے۔

٭اپنی آخرت کی فکر خود کریں ،آج زندہ کوکوئی نہیں پوچھتا ، کل مٹی کے ڈھیر کوکون پوچھے گا۔

الماس بی بی، جماعت سیکنڈ ایئر، گورنمنٹ ہائیر سکینڈری سکول آدم واہن، ضلع لودھراں

واہ  کیا بات ہے

٭ جس گھر میں کتابیں نہیں وہاں نیکی خاموش ہے۔

٭آدمی مطالعہ سے بیدار ہوتا ہے ، مکالمے سے تمیز آتی ہے اور لکھنے سے اس کی شخصیت نکھر جاتی ہے۔

تہمینہ عباس، جماعت سیکنڈ ایئر، گورنمنٹ ہایئر سکینڈری سکول آدم واہن، ضلع لودھراں

اقوال زریں

٭ علم ایک ایسا نور ہے  اللہ جسے چاہتا  ہے عطا فرماتا ہے۔

٭ علم کی محبت اور استاد کی عزت  کے بغیر کچھ  حاصل نہیں ہوتا۔

٭ با ادب شاگرد ہی  ہمیشہ علم سے پورا مستفیض ہو تا ہے۔

٭ بد عملی ایک ایسی بیماری ہے جو علم کی برکات  کو زائل اور  باطل کر دیتی ہے۔

٭ عالم بے عمل  اس پتھر کی طرح ہے  جو اوروں کو سونا بناتا ہے  مگر خود پتھر کا پتھر ہی رہتا ہے۔

محمد علی، جماعت ہشتم، گورنمنٹ نورالاسلام ہائی سکول رحمان آباد ، ضلع لیہ

سُچے  موتی

٭ عقل مند بولنے سے پہلے جب کہ  بے  وقوف بولنے کے بعد سوچتا ہے۔

٭ غربت خیرات سے نہیں انصاف سے  ختم ہوتی ہے۔

٭ ایک شخص  ہی تمہیں کامیاب کر سکتا ہے اور وہ شخص تم خود ہو۔

٭ مخلوق کے حق میں سب سے پہلا حق والدین کا ہے۔

طلعت فاطمہ، جماعت ہفتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول سخی سرور، ضلع ڈیرہ غازی خان

قیمتی باتیں

٭ غلطی اسی سے ہوتی ہے جو محنت کرتا ہے،  نکمے لوگوں کی زندگی تو دوسروں کی غلطیاں نکالنے میں گزر جاتی ہے۔

٭ جن کے ساتھ اچھا وقت گزرا ہو ،انہیں برا نہیں کہتے۔

٭ انسانیت وہاں دم توڑ دیتی ہے جہاں ایک انسان کی مصیبت دوسرے کے لیے تماشا بن جاتی ہو۔

محمد راشد، جماعت ششم، گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول ممتاز آباد، ضلع وہاڑی

باتوں سے خوشبو آئے

٭ برے دوستوں سے بچو ایسا نہ ہو کہ تمہارا تعارف بن جائیں۔

٭ اگر اللہ آپ کو انتظار کروا رہا ہے تو وہ آپ کو اس سے زیادہ دے گا، جو آپ نے اللہ سے مانگا ہے۔

٭ دل میں برائی رکھنے سے بہتر ہے کہ ناراضی کو ظاہر کر دو۔

٭ مسلمان وہ ہے جو اللہ کو مانتا ہے اور مومن وہ ہے جو اللہ کی مانتا ہے۔

٭ اچھے لوگ سڑک کے کنارے لگی روشنیوں کی مانند ہوتے ہیں،  جو فاصلے تو کم نہیں کرتے البتہ راستے کو چلنے والوں کے لیے آسان ضرور بنا دیتے ہیں۔

ام کلثوم، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 253 ڈبلیو بی، لودھراں

اقوال زریں

٭ سستی ایک ایسی دھوپ ہے جو اچھے سے اچھے وجود کو جلا کے راکھ کر دیتی ہے

٭ سچائی ایسی دوا ہے جس کی لذت کڑوی مگر تاثیر میٹھی ہے۔

٭ زبان کی حفاظت کرو کیونکہ عزت و ذلت کی یہی ذمہ دار ہے۔

٭ انسان ہمیشہ اپنے دوست سے اور درخت ہمیشہ اپنے پھل سے پہچانا جاتا ہے۔

سویرا شہزادی، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 253 ڈبلیو بی، لودھراں

اقوال زریں

٭ جس کا کوئی خواب نہیں ،اس کاکوئی مستقبل نہیں۔

٭ جس شخص کے اچھے دوست ہوتے ہیں وہ کبھی بھی غریب نہیں ہوتا۔

٭ مومن کا اتنا علم کافی ہے کہ وہ اللہ سے ڈرتا رہے۔

٭ علم اگر عمل میں بدل جائے تو شخصیت چمک اٹھتی ہے۔

٭ تعلق بھی رزق کی طرح ہوتا ہے بدنیتی آجائے تو برکت ختم ہوجاتی ہے۔

ربیعہ ریاض، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 293 / ٹی ڈی اے، لیہ

باتوں سے  خوشبو  آئے

٭ جو خا موش رہتا ہے وہی نجا ت پا تا ہے۔

٭ انسا ن کا خود پسندی میں مبتلا ہو جانا خود اپنی عقل سے حسد کرنا ہے۔

٭ اپنی اصلیت کو نہ چھپاؤ ورنہ حقیقت آشکار ہو نے پر شرمندہ ہو نا پڑے گا۔

٭ زندگی اتنے اچھے طریقے سے جیو کہ موت کو بھی شکست ہو جائے۔

٭ انسانیت بہت بڑا خزانہ ہے اسے لباس نہیں بلکہ انسان میں تلاش کرو۔

٭ اپنا مقا بلہ دوسروں کے ساتھ مت کرو کیونکہ سورج ہو یا چاند ، دونوں اپنے وقت پر  چمکتے ہیں ۔

غلام مصطفی، جماعت نہم، گورنمنٹ ہائی سکول253 ڈبلیو بی، لودھراں

لفظوں سے  خوشبو آئے

٭آخرت میں نیکیوں کے مطابق مرتبے ملتے ہیں اس لیے نیکی کرو۔

٭جو شخص کوشش اور عمل میں کوتاہی کرتا ہے، پیچھے رہنا اس کا مقدر ہے ۔

٭انسان وہ ہے جس کی ذات سے دوسروں کو فائدہ پہنچے  ورنہ پتھر ہے۔

٭نیکی کرنے والا نیکی کا صلہ ضرور پاتا ہے۔

٭مصیبت میں حوصلہ نہیں ہارنا چاہیے ، ہمت سے اس کا مقابلہ کرنا چاہیے کیونکہ ہمت طاقت سے زیادہ کام کرتی ہے۔

دعا زینب، جماعت دہم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول شریف چھجڑہ،مظفرگڑھ

واہ کیا بات ہے

٭علم کا ایک قطرہ جہالت کے سمندر سے بہتر ہے۔

٭عمل کا ایک قطرہ علم کے سمندر سے افضل ہے۔

٭صبر انسان کو اندر سے مضبوط کر دیتا ہے۔

٭دوستی کا رشتہ بہت بہتر ہے رشتہ داری سے، کیوں کہ رشتہ داروں سے رشتہ خون کا ہوتا ہے   جبکہ دوستوں سے رشتہ دل کا ہوتا ہےاور دل سارے جسم کو خون مہیا کرتا ہے۔

ایمن خان، جماعت نہم، گورنمنٹ گرلز ہائی اسکول 253 ڈبلیو بی، لودھراں

مہکتی کلیاں

٭عقل مند بولنے سے پہلے اور بے وقوف بولنے کے بعد سوچتا ہے۔

٭ جس نے معاف کر دیا وہ یقیناً معاف کر دیا گیا۔

٭ جیسا سوچو گے ویسے ہی بنو گے، تمہارے خیالات ہی تمہاری تقدیر ہیں۔

٭ زندگی کو سادہ رکھو مگر خیالات کو بلند۔

٭اس مال سے پناہ مانگو جو مغرورکر دیتا ہے۔

مہوش مقصود، جماعت دہم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 279 ڈبلیو بی، ضلع لودھراں

معلم کائنات جناب حضرت محمدمصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا

٭ مؤمن نہ طعنہ دینےوالا ہوتا ہے، نہ لعنت کرنے والا، نہ فُحْش بکنے والا بے ہودہ ہوتا ہے۔ (ترمذی)

 ٭جب تم کو اپنے اچھے عمل سے مسرت ہو اور بُرے کام سے رنج اور قلق ہو تو تم مومن ہو۔ (مسند احمد)

 ٭ انسان میں سب سے بڑی بداخلاقی گھبرا دینے والا بخل اور دل ہلا دینے والی بزدلی ہے۔ (ابوداؤد)

٭ مسلمانوں کی مثال باہمی محبت اور ایک دوسرے پر شفقت کرنے میں ایسی ہے جیسے ایک جسم اگر اس کا کوئی ایک عضو بیمار ہوتا ہے تو جسم بخار میں مبتلا ہو جاتا ہے۔ (صحیح البخاری)

٭جو شخص لوگوں پر رحم نہیں  کرتا،  اس پر  اللہ  تعالیٰ بھی رحم نہیں  فرمائے گا۔ (مسلم)

کنزا بی بی ، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول سمرا نشیب شمالی لیہ

فرامین حضرت علی المرتضیٰ کرم اللہ وجہہ

٭ اپنی زبان کی تیزی اس کے خلاف استعمال نہ کرو جس نے تمہیں بولنا سکھایا ہے اور اپنے کلام کی فصاحت کا مظاہرہ اس پر نہ کرو جس نے راستہ دکھایا ہے۔

٭ جب تمہیں کوئی تحفہ دیا جائے تو اس سے بہتر واپس کرو اور جب کوئی نعمت دی جائے تو اس سے بڑھا کر بدلہ دو لیکن اس کے بعد بھی فضیلت اسی کی رہے گی جو پہلے کار خیر انجام دے۔

حسین حیدر، جماعت سوئم، گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول انجمن حمایت الاسلام وہاڑی

اقوال زریں

٭ عزت و شان عدل و انصاف میں ہے۔

٭ دل کو شیطان کا گھر مت بناؤ۔

٭ محنت اتنی خاموشی سے کرو کہ تمہاری کامیابی شور مچا دے۔

٭ مسائل انسان کو ایسے نکھارتے ہیں جَیسے آگ سونے کو۔

بشریٰ ارشد، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول 253 ڈبلیو بی، دنیاپور، ضلع لودھراں

سُچے  موتی

٭ کسی کی تعریف کو دماغ پر اور کسی کی تنقید کو دل پر کبھی سوار نہ ہونے دیں۔

٭ اللہ سے جب بھی مانگیں بھروسے سے مانگیں، کیونکہ وہ تب بھی دیتاہے جب آپ نہیں مانگتے، پھر یہ کیسے ممکن ہے کہ آپ مانگیں اور وہ عطا نہ کرے۔

٭ ایک شخص بن کر نہ جیو بلکہ ایک شخصیت بن کر جیو، کیونکہ شخص تو مرجاتا ہے لیکن شخصیت نہیں مرتی۔

٭ آپ کا اچھا وقت دنیا کو بتاتا ہے کہ آپ کون ہیں اور آپ کا برا وقت آپ کو بتاتا ہے کہ دنیاکیا ہے۔

٭ ایسی خوشی سے بچو جو دوسروں کو دکھ دے کر حاصل ہو۔

٭ جو شخص اپنے ہر کام کو پسند کرتا ہے اس کی عقل میں خلل آ جاتا ہے۔

٭ جب تک تیرا غرور اور غصہ باقی ہے، اپنے آپ کو نیک لوگوں میں شمار نہ کر۔

٭ اچھا دوست ایسے درخت کی مانند ہے جو سایہ بھی دے گا اور پھل بھی۔

٭ اختلاف کے باوجود کسی سے اچھے اخلاق سے پیش آنا کمزوری نہیں بلکہ بہترین تربیت اور خاندانی ہونے کی دلیل ہے۔

٭ کامیاب انسان اپنی منزل کو پیش نظر رکھتے ہیں رستے کی روکاوٹوں کو نہیں۔

شازیہ فدا حسین، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول ڈیوالہ ،تحصیل جلالپور پیروالا، ضلع ملتان

سنہری باتیں

٭ علم کتابوں سے اور عقل تجربے سے آتی ہے۔

٭ مصیبت میں ہمت سے کام لینا آدھی کامیابی ہے۔

٭ صبر کا ہر قدم کامیابی کی طرف بڑھتا ہے۔

٭ نصیحت کریں مگر شرمندہ نہ کریں نصیحت کا مقصد دستک دینا ہوتا ہے دروازہ توڑنا نہیں۔

٭ انسان کی پہچان علم سے نہیں بلکہ ادب سے ہوتی ہے کیونکہ علم تو ابلیس کے پاس بھی تھا مگر ادب سے محروم تھا۔

٭ آدمی  کی قابلیت اس کی زبان کے نیچے پوشیدہ ہوتی ہے۔

روبینہ بی بی ، جماعت سکینڈ ایئر، گورنمنٹ گرلز ہائیر سیکنڈری سکول آدم واہن لودھراں

اقوالِ زریں

٭ انسان بھی کیا چیز ہے، دولت کمانے کے لیے اپنی صحت کھو دیتا ہے، صحت کو واپس پانے کے لیے اپنی دولت کو کھو دیتا ہے۔مستقبل کو سوچ کر اپنا حال ضائع کر دیتا ہے،پھر مستقبل میں اپنا ماضی یاد کر کے روتا ہے۔جیتا ایسے ہے جیسے کبھی مرے گا ہی نہیں اور مرتا ایسے ہے جیسے کبھی جیا ہی نہیں۔

٭ سب سے بڑا گناہ وہ ہے جو کرنے والے کی نظر میں چھوٹا ہو۔

٭ گفتگو ایسی چیز ہے جس کی وجہ سے انسان یا تو دل میں اُتر جاتا ہے یا پھر دل سے اُتر جاتا ہے۔

٭ تین رشتے تین وقت میں بے نقاب ہوتے ہیں ۔ایک بڑھاپے میں اولاد ، دوسرا مصیبت میں دوست ، تیسرا غربت میں بیوی۔

٭ زندگی کے ہر موڑ پر صلح کرنا سیکھو کیونکہ جھکتا وہی ہے جس میں جان ہوتی ہے اور اکڑنا تو مردے کی پہچان ہوتی ہے۔

مزمل حسین ،جماعت سیکنڈ ائیر ،گور نمنٹ کمپری ہنسیو ہائیر سکینڈری سکول ملتان

بڑے لوگوں کی بڑی  باتیں

٭ والدین کی خوشنودی دنیا میں دولت اور آخرت میں نجات ہے۔ (حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ)

٭ خاموشی غصے کا بہترین علاج ہے۔ (حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ)

٭ خوش اخلاقی بہترین دوست ہے۔ (حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ)

٭ نیک لوگوں سے میل جول رکھو گے تو تم بھی نیک ہو جاؤ گے۔ (حضرت علی رضی اللہ  عنہ)

٭ خوش رہنا چاہتے ہو تو دوسروں کو خوش رکھو۔ (شیخ عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ)

٭ تلاوت کلام پاک سے افضل کوئی عبادت نہیں ہے۔ (فریدالدین گنج شکر رحمتہ اللہ علیہ)

٭ کھانے میں عیب نہ نکالو، اگر پسند نہ ہو تو مت کھاؤ۔ (امام غزالی رحمتہ اللہ علیہ)

محمد شاہد، جماعت ہفتم، گورنمنٹ ہائیر سکینڈری سکول کوٹ مبارک، ڈیرہ غازی خان

باتوں سے خوشبو آئے

٭ خوش نصیب وہ نہیں جس کا نصیب اچھا ہو بلکہ وہ ہے جو اپنے نصیب پر خوش ہو۔

  ٭ عزت دل میں ہونی چاہیے لفظوں میں نہیں، ناراضی لفظوں میں ہونی چاہیے دل میں نہیں۔

٭ برائی جیت تو سکتی ہے لیکن برائی کے نصیب میں جشن فتح نہیں۔

٭ امید کا دامن کبھی بھی ہاتھ سے نہیں چھوڑنا چاہیے کیوں کہ  امید پر ہی تو یہ دنیا قائم ہے، جب کہ مایوسی گمراہی اور کفر کی طرف لے جاتی ہے۔

٭ ہمیشہ دوسروں کے لیے آسانیاں پیدا کرنے کی کوشش کریں، اللہ آپ کے راستے کی مشکلات دور فرمائے گا۔

٭ زبان کی تلخی تلوار کی دھار سے تیز ہوتی ہے۔

عبدالرحمٰن، جماعت نہم، گورنمنٹ ہائی سکول شریف چھجڑا،مظفرگڑھ

سنہرے لفظ

٭ پانی بنو جو اپنا راستہ خود بناتا ہے پتھر نہ بنو جو دوسرے کے راستے میں رکاوٹ بنتا ہے

٭ زندگی میں اپنا پن تو ہر کوئی دکھاتا ہے لیکن اپنا کون ہے یہ وقت بتاتا ہے ۔

انعم حنیف، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول چک نمبر 128 ڈبلیو بی، ضلع وہاڑی

اقوال زریں 

٭ زبان کھولنے سے پہلے سوچ لو کہ دنیا آپ سے زیادہ عقل مند ہے۔

٭جیسا سوچو گے ویسے بنو گے، تمہا ر ے خیالا ت ہی تمہا ری تقدیر ہیں۔

٭اچھا وقت اسی کا ہو تا ہے جو کسی کا برا نہیں سوچتا۔

٭اگر بلند یوں کو چھونا چاہتے ہو تو اپنے دل میں انسا نیت کے لیے محبت پیدا کرو۔

سدرہ مرید ، جماعت ششم ، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول چوکی گبول، ضلع مظفرگڑھ

حرف حرف خوشبو

٭ علم وہ شجر ہے جو دل میں اگتا ہے، دماغ میں پھیلتا ہے اور زبان سے پھل دیتا ہے۔

٭ دنیا میں انہی لوگوں کی قدرہوتی ہے جنہوں نے زندگی میں اپنے استاد کی قدرکی ہوتی ہے۔

٭ ہمیشہ سچ بولو، تاکہ قسم کھانےکی ضرورت نہ پڑے۔

٭ جو شخص محنت کرتا ہے اس کے سامنے پہاڑ کنکر ہے اور جو سست اور کاہل ہے اس کے سامنے تو کنکر بھی پہاڑ ہے۔

٭ گناہ سے بچ کر رہو اور نیکی کی طرف بڑھتے جاؤ۔

نمرہ انیس، جماعت ہفتم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول محراب والا، ضلع بہاول پور

واہ کیا بات  ہے

٭ اپنے رب کے سوا کسی سے امید نہ رکھو۔

٭ کامیابی صرف ان لوگوں کو ملتی ہے جن کو کامیابی کا یقین ہو۔

٭ علم ایک ایسا بادل ہے جس سے ہمیشہ رحمت برستی ہے۔

٭ ہر انسان اپنے ظرف کے مطابق دوسروں سے پیش آتا ہے۔

٭ دن کی روشنی میں رزق تلاش کر اور رات کو اسے تلاش کر جو تمہیں رزق دیتا ہے۔

٭ ادب سے علم سمجھ میں آتا ہے

٭ کامیابی ایک دفعہ دروازہ کھٹکھٹاتی ہے جبکہ ناکامی اور مصیبت ہر وقت۔

٭ خوشحال زندگی گزارنا چاہتے ہو تو اپنے آپ کو سنوار لو۔

٭ ہمیشہ سچ بولو تاکہ تمہیں قسم کھانے کی ضرورت نہ پڑے۔

طاہر نواز ، جماعت ششم، گورنمنٹ ہائی سکول 93/10 آر، ضلع خانیوال

سنہری باتیں

٭ آج عمل ہے حساب نہیں ، کل حساب ہو گا عمل نہیں۔

٭ حسد کرو گے تو کچھ نہیں پاؤ گے، شکر کرو گے تو گن نہیں پاؤ گے۔

٭ سب سے بڑا گناہ وہ ہے جو کرنے والے کی نظر میں چھوٹا ہو۔

زینب ناصر ، جماعت ششم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول غازی پور، ضلع ملتان

اقوال زریں

   ٭جس امت کے لوگوں کو قبرستان سے گزرتے وقت مردے کو بھی سلام کرنے کا حکم ہے وہ اتنی بے حس ہو چکے ہیں کہ زندوں کو بھی بغیر مطلب کے سلام نہیں کرتے۔

٭کڑوی زبان والے کا شہد نہیں بکتا جبکہ میٹھی زبان والے کی مرچیں بھی بک جاتی ہیں۔

مہرمہ خان، جماعت دہم، گورنمنٹ گرلز ہائی سکول کوٹ سلطان، ضلع لیہ

سنہری باتیں 

٭علم وہ نہیں جو آپ نے سیکھا ہے، علم تو وہ ہے جو آپ کے عمل اور کردار سے واضح ہو۔

٭توکل وہ ہے کہ آدمی اللہ کے سوا کسی سے اُمید نہ رکھے۔

٭ایسی خوشی سے بچو جو دوسروں کو دکھ دینے سے حاصل ہوتی ہو۔

٭دل میں اُترنے کے لیے سیڑھی نہیں بلکہ اچھے اخلاق کی ضرورت ہوتی ہے۔

٭علم ایک روشن چراغ ہے جو اندھیرے میں روشنی دِکھاتا ہے۔

٭اپنے اخلاق کو پھول جیسا بنا لو تاکہ پاس بیٹھنے والا خوشبو حاصل کر لے۔

٭تین چیزوں کو ہمیشہ حاصل کرو یعنی علم، اخلاق اور شرافت

محمد ثقلین، جماعت دہم، گورنمنٹ بوائز ہائی سکول لیہ

اقوال زریں

 ٭اگر آپ میں جذبہ ہے تو آپ ایک فرد ہو کر بھی ادارے کے برابر کام کر سکتے ہیں۔
٭آپ کی امامت میں بننے والی صفیں اور آپ کے جنازے میں بننے والی صفیں یہ بتاتی ہیں کہ آپ کتنے بڑے انسان ہیں۔
 ٭اللہ کریم سے وہ عقل مانگیں جو آپ اور آپ سے وابستہ لوگوں کے کام آ سکے۔
 ٭کبھی سوچیں، چلے کہاں سے تھے اور پہنچ کہاں گئے۔۔۔۔۔۔پھر شکر ادا کریں۔
 ٭جڑیں مضبوط ہوں تو بلندی نصیب میں لکھ دی جاتی ہے۔
 ٭گذشتہ سے پیوستہ رہنے والا انسان امید بہار نہیں رکھ سکتا۔
 ٭وہ استاد کمال کا انسان ہے جو اپنے اخلاق اور کردار سے آپ کی زندگی کو بدل کر رکھ دے۔
 ٭اندھی عقیدت سوال چھین لیتی ہےاور سوال ہی علم تک پہنچنے کا واحد ذریعہ ہے۔

محمد ذوالکفل، جماعت نہم، گورنمنٹ ہائی سکول خان گڑھ ڈوئمہ، ضلع مظفر گڑھ

 قائد اعظم نے فرمایا

٭دنیا کی کوئی طاقت پاکستان کو ختم نہیں کر سکتی۔ (لاہور30 اکتوبر1947)

٭انصاف اور مساوات میرے رہنماء اصول ہیں اور مجھے یقین ہے کہ آپ کی حمایت اور تعاون سے ان اصولوں پر عمل پیرا ہو کر ہم پاکستان کو دنیا کی سب سے عظیم قوم بنا سکتے ہیں۔ (قانون ساز اسمبلی 11 اگست 1947)

 ٭دنیا کی کوئی قوم اس وقت تک ترقی نہیں کرسکتی جب تک اس کی خواتین مردوں کے شانہ بشانہ معاشرے کی تعمیر و ترقی میں حصہ نہ لیں۔ عورتوں کو گھر کی چار دیواری میں بند کرنے والے انسانیت کے مجرم ہیں۔ (مسلم یونیورسٹی یونین 1944)

 ٭پاکستان کی داستان، اس کے لئے کی گئی جدوجہد اور اس کا حصول، رہتی دنیا تک انسانوں کے لئے رہنما رہے گی کہ کس عظیم مشکلات سے نبرد آزما ہوا جاتا ہے۔ (چٹاگانگ 23 مارچ 1948

عائشہ بی بی، جماعت ہشتم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول ٹبہ سلطان پور، ضلع وہاڑی

سنہری باتیں
٭جہالت عیب ہے۔علم کے باوجود عمل نہ ہونا سب سے بڑا عیب ہے۔
٭گناہ کا موقع نہ ملنا بھی اللہ تعالیٰ کی نعمت ہے۔
٭ جب زبان کی اصلاح ہو جاتی ہے تودل بھی صالح ہو جاتا ہے۔

محمد اعظم، جماعت نہم، گورنمنٹ بوائز ہائی سکول جھلاریں شمالی، ضلع مظفر گڑھ

باتوں سے خوشبو آئے

٭عذاب کی تلخی گناہ کی شیرینی کو بھلا دیتی ہے۔

٭جس طرح شبنم سے کنواں نہیں بھر سکتا اسی طرح حریصوں کی آنکھ کا کاسہ دنیا سے نہیں بھر سکتا۔

٭اچھی تعلیم تو ضروری ہے ہی، اچھی تربیت اس سے بھی زیادہ ضروری ہے۔

٭علماء کی صحبت اور کتب حکمت کے مطالعہ سے مسرت بخش زندگی حاصل ہو سکتی ہے۔

٭اگر تم غلطیوں کو روکنے کے لیے دروازے بند کر دو گے تو سچ بھی باہر رہ جائے گا

آمنہ کنول، جماعت پنجم، گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول جھانگڑہ غربی، ضلع بہاول پور

حرف حرف خوشبو

٭رشتے خون کے نہیں ،احساس کے ہوتے ہیں اگر احساس ہوتو اجنبی بھی اپنے ہو جاتے ہیں ۔اگر احساس نہ ہوتو اپنے بھی اجنبی ہو جاتے ہیں ۔

٭انسان جب تک اپنا مو ل نہیں لگاتا ،انمو ل کہلاتا ہے۔

٭وقت کی ایک عادت بہت اچھی ہے جیسا بھی ہو، گزر جاتا ہے ۔

٭دوسروں کو نصیحت کے پھول دیتے وقت خود ان کی خوشبو لینا نہ بھولیں ۔

٭غلطی ماننے اور گناہ چھوڑنے میں کبھی دیر مت کریں ۔

٭امید آدھی زندگی ہے اور مایوسی آدھی موت ہے۔

پرویز اقبال، جماعت دہم، گورنمنٹ بوائز ہائی سکول چک نمبر 116 ٹی ڈی اے، ضلع لیہ

حکا یات سعدی

٭زندگی  کی درازی کا راز صبر میں پوشیدہ ہے۔

٭اگر تم چاہتے ہو کہ تمہارا نام باقی رہے تو اولاد کو اچھے اخلاق سکھاؤ۔

٭اگرچہ ا نسا ن کو مقدر سے زیادہ رزق نہیں ملتا لیکن رزق کی تلا ش میں سُستی نہیں کرنی چا ہیے۔

٭دشمن سے ہمیشہ بچو اور دوست سے اُس وقت جب وہ تمہا ری تعریف کرنے لگے

اریج شاہین، جماعت ششم،گورنمنٹ گرلز ہائی سکول، چک نمبر 156 ٹی ڈی اے، ضلع لیہ
شیئر کریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •